جے کے این ایس ؍ سابق وزیرا علیٰ نے مرکزی حکومت پر زور زبردستی کی پالیسی کے بجائے مذاکرات کا راستہ اپنانے پر زور دیتے ہوئے کہاکہ تین پولیس اہلکاروں کی ہلاکت اس کا بین ثبوت ہے کہ زبردستی کرنے سے معاملات بگڑ جائینگے۔ جے کے این ایس کے مطابق کاپرن شوپیاں میں تین پولیس اہلکاروں کا اغوا کرنے کے بعدا نہیں گولیوں سے بوندھ کر رکھ دینے پر سابق وزیر اعلیٰ اور پی ڈی پی صدر مھبوبہ مفتی نے مرکزی حکومت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے بتایا کہ طاقت ، قوت اور ڈھونس دباو سے کچھ حاصل ہونے والا نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ تین پولیس اہلکاروں کی ہلاکت اس بات کا ثبوت ہے کہ مرکز کی جانب سے ریاست خاص کرو ادی کشمیر میں اپنائی جارہی پالیسی کام نہیں کر رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگر چہ بات چیت واحد راستہ ہے تاہم مرکزی حکومت کی جانب سے اس سلسلے میں بھی سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ تین پولیس اہلکاروں کی ہلاکت کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

LEAVE A REPLY