Home

اننت ناگ میں پنچایت گھروں کی حالت ناگفتہ بہہ ہونے کے باعث منشيات فروشی اور قماربازی کے آڈو میں تبدیل،محکمہ دیہی ترقی خوابِ خرگوش میں مست۔

اننت ناگ / 07جولائی / جے کے این ایس / جاوید گل ۔

پورے ملک کی طرح پنچایتی راج کو مستحکم کرنے اور عوام تک پنچایتی خدمات پہنچانے کی غرض سے اننت ناگ میں بھی پنچایت گھروں کی تعمیر پر کروڑوں روپیے خرچ کیے گئیے تاہم ان پنچایت گھروں کی اور متعلقہ مًحکمہ کی عدم توجہی کے باعث قماربازوں اور نشے کی لت میں مبتلا نوجوانوں نے انہیں قماربازی اور منشیات کے آڈو میں تبدیل کر کے رکھ دیا ہے ۔جے کے این ایس کے نمائندے جاوید گل کے مطابق اننت ناگ میں سرکار نے مختلف حلقہ جات میں کروڑوں روپیے صرف کر کے پنچایت گھر تعمیر تو کئے لیکن محکمہ کی اور سے ان پر اپنی توجہ مرکوز نہ کرنے کے باعث انہیں اب منشیات اور قماربازی کے آڈو میں تبدیل کیا گیا ہیں ، اور اس طرح جس مقصد کے لئے ان کا قیام عمل میں لایا گیا تھا تاہم وہ پورا ہوتا ہوا نظر نہیں آرہا ہے، کروڑوں روپیے کی لاگت سے تعمیر کیے گیے یہ پنچایت گھر اب عوام کے لئے راحت کے بجائے وبال بن گئے ہیں اگر ان پنچایت گھروں کی دیکھ ریکھ کے لئے چوکیدارو کی تعیناتی وقت پر عمل میں لائی گئی ہوتی تو ان پنچایت گھروں کو غیرقانونی سرگرمیوں کے لئے استعمال میں نہیں لایا جاتا ،اور ان پنچایت گھروں کی قابلِ رحم حالت دکھ کر اس بات کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ ان سے متعلق ادارے پنچایت راج کو لئے کر کس حد تک سنیجیدہ ہیں اس پر بحث کرنا فضول ہے ، عوامی حلقوں نے ضلع انتظامہ اننت ناگ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پنچایت گھروں کی دیکھ ریکھ کے لئے ملازمین فوری طور پر تعینات کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے تاکہ ضلع میں پنچایت گھروں کو کوئی بھی کسی قسم کی غیرقانونی سرگرمیوں کے لئے استعمال نہ کر سکھے، ورنہ قماربازی اور منشیات فروشی کو مزید تقویت ملے گی۔

Leave a Reply