Tuesday, May 17

پاکستان اور بھارت کے مابین دوستانہ تعلقات قائم ہونے چاہئے: ڈاکٹر فاروق عبدا ﷲ

سری نگر// نیشنل کانفرنس کے صدر اور سابق وزیر اعلی ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے حد بندی کمیشن کی جانب سے حال ہی میں منظر عام پر آنے والی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ہم اس رپورٹ کے خلاف ایک مسودہ تیار کر رہے ہیں جس کو چودہ تاریخ سے پہلے کمیشن کے سامنے پیش کیا جائے گا۔
ٓانہوں نے کہاکہ ہندوپاک کے مابین دوستانہ تعلقات سے نفرتوں کی لہر بھی ٹوٹ جائے گی۔
ان باتوں کا اظہار موصوف نے پلوامہ میں نامہ نگاروں سے بات چیت کے دوران کیا۔
نیشنل کانفرنس کے سرپرست اعلیٰ نے کہاکہ کچھ انتہا پسند سوچ کے حامی مذہب کی بنیاد پر لوگوں کو آپس لڑا نا چاہتے ہیں تاکہ وہ چناو میں جیت حاصل کرسکے۔
انہوں نے بتایا کہ اس طرح کی سیاست کو ملک کے لوگوں نے ماضی میں بھی مسترد کیا اور مستقبل میں بھی اس کے لئے کوئی جگہ موجود نہیں ہے۔
حجاب پر پابندی کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں این سی سرپرست نے کہاکہ آپ کیا کھاتے اور پہنتے ہیں یہ آئین نے اس ملک کے لوگوں کو آزادی دی ہے ۔
حد بندی کمیشن کی جانب سے حال ہی میں منظر عام پر آنے والی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق عبدا ﷲ نے کہاکہ اس رپورٹ کے خلاف نیشنل کانفرنس ایک مسودہ تیار کر رہی ہیں اور 14تاریخ سے پہلے حدبندی کمیشن کے سامنے پیش کیا جائے گا۔
ہندوپاک تعلقات کے بارے میں فاروق عبدا ﷲ نے کہاکہ پاکستان اور بھارت کے مابین اچھے تعلقات قائم ہونے چاہئے کیونکہ دونوں ممالک میں اگر دوستانہ تعلقات قائم ہونگے تونفرتوں کی لہر بھی ٹوٹ جائے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: